امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو سعودی حکومت کی جانب سے اعلیٰ ترین سول ایوارڈ ’عبدالعزیز السعود‘ سے بھی نواز گیا۔ فوٹو: اے ایف پی

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو سعودی حکومت کی جانب سے اعلیٰ ترین سول ایوارڈ ’عبدالعزیز السعود‘ سے بھی نواز گیا۔ فوٹو: اے ایف پی

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق امریکا اور سعودی عرب میں دفاعی اسٹریٹیجی سمیت دیگرشعبوں میں تعاون بڑھانے پراتفاق ہوا جب کہ دونوں ممالک کے درمیان 110 ارب ڈالر کے دفاعی معاہدے طے پائے ہیں، سعودی شاہ سلمان اور صدر ٹرمپ دفاعی معاہدوں سمیت مفاہمتی یادداشتوں پر دستخط کیے جس کے بعد دونوں نے مصافحہ بھی کیا۔

اس سے قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا خصوصی طیارہ آج صبح سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض ایئرپورٹ پر لینڈ ہوا تو صدر ٹرمپ اور ان کی اہلیہ میلانیا ٹرمپ کا استقبال شاہ سلمان بن عبدالعزیز نے خود کیا۔ اس موقع پر ڈونلڈ ٹرمپ کے ہمراہ ان کی اہلیہ کے علاوہ ان کے بیٹی اور صدارتی مشیر ایوانکا ٹرمپ اور داماد جیریڈ کوشنر بھی موجود تھے جو ٹرمپ کابینہ کے اہم رکن ہیں۔

دوسری جانب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو سعودی حکومت کی جانب سے اعلیٰ ترین سول ایوارڈ ’عبدالعزیز السعود‘ سے بھی نواز گیا۔ اپنے 2 روزہ دورے کے دوران صدر ٹرمپ اتوار کو ریاض میں عرب اسلامک امریکن سربراہی اجلاس میں شرکت کریں گے اور اس دوران وہ اسلام کے  پرامن تصور کے بارے میں بات کریں گے جب کہ ٹرمپ بعد میں ولی عہد، نائب ولی عہد سے الگ الگ ملاقاتیں کریں گے۔

خبر رساں ایجنسی کے مطابق سعودی وزیر خارجہ عادل الجبیر نے ریاض اور امریکا میں تاریخی تعلقات کو سراہتے ہوئے امید ظاہر کی ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ کے دورے میں اُن اختلافات کو دور کرنے میں مدد ملے گی جو اوباما دورِ حکومت میں سعودی عرب اور امریکا کے درمیان پیدا ہوئے تھے۔ علاوہ ازیں امریکی صدر کے دورہ سعودی عرب کے موقع پردفاعی شعبوں میں نئے معاہدوں پر دستخط ہوں گے۔

سعودی وزیرِ خارجہ عادل بن احمد الجبیر نے اپنے پالیسی بیان میں یہ بھی کہا کہ وہ اپنے اتحادی ممالک اور خاص طور پر امریکا کے ساتھ مل کر کام کریں گے اور چاہیں گے کہ ایران ایک ’’عام ملک‘‘ کی طرح کردار ادا کرے۔ انہوں نے کہا کہ یہ اسلامی دنیا کے لیے بہت بھرپور پیغام ہے کہ امریکا اور مغرب آپ کے دشمن نہیں ہیں، یہ مغرب کے لیے بھی بھرپور پیغام ہے کہ اسلام آپ کا دشمن نہیں ہے۔

واضح رہے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سعودی عرب کے بعد اسرائیل، فلسطینی علاقے، برسلز، ویٹیکن اور سسلی کا دورہ بھی کریں گے۔